sngpl - گھریلو صارفین کو صرف 3 وقت کھانا پکانے کیلئے گیس دینے کی تجویز

وزارت توانائی نے موسم سرما میں گھریلو صارفین کو صرف کھانا بنانے کے اوقات میں دن میں تین مرتبہ گیس فراہم کرنے کی تجویز دے دی۔
کابینہ کی توانائی کمیٹی کی طرف سے آئندہ ہفتے سردیوں کیلئے گیس لوڈمنیجمنٹ پلان کی منظوری دی جائے گی جبکہ منظوری کیلئے وزارت توانائی کے پیٹرولیم ڈویژن نے تجاویز تیار کر لیں۔
پیٹرولیم ڈویژن کی طر ف سردیوں میں گھریلو صارفین کو دن میں صرف تین وقت کھانا پکانے کیلئےگیس فراہمی کی تجویز تیار کی گئی ہے، یعنی کھانے بنانے کے طے شدہ اوقات کار کےعلاوہ گیس دستیاب نہیں ہو گی۔

یہ تجویز کمیٹی کے اجلاس میں پہلے بھی پیش ہوئی اور قابل عمل نہیں لگی اور فیصلہ مؤخر کر دیا گیا تاہم اب یہ فیصلہ اگلے ہفتے ہوگا۔
دوسری اہم ترین تجویز یہ کہ موسم سرما میں گیس پریشر میں کمی کے باعث پنجاب، وفاقی دارالحکومت اسلام آباد اور سوئی نادرن گیس سسٹم کے علاقوں میں دسمبر اور جنوری کے دو ماہ گاڑیوں کی سی این جی مکمل طور پر بند کر دی جائے جبکہ سندھ میں سوئی سدرن کے علاقوں میں ہفتہ وار سی این جی کی فراہمی تین روز کیلئے بند کی جائے۔

یہ بھی تجویز کیا گیا ہے کہ پاور سیکٹر، برآمدی صنعتوں اور کھاد کی صنعت کو گیس کی بلاتعطل فراہمی کو جاری رکھا جائے۔
ان سب تجاویز پر حتمی فیصلہ کابینہ کی توانائی کمیٹی کرے گی جس کے بعد سردیوں کیلئے گیس لوڈمنیجمنٹ پلان کا اعلان متوقع ہے۔