pmkhan - وزیر اعظم عمران خان نے ملک بھر کیلئے احساس تعلیمی وظائف کا اجرا کردیا

ملک بھر کیلئے احساس تعلیمی وظائف کا اجرا، لڑکوں کا ڈیڑھ ہزار، لڑکیوں کو دو ہزار روپے ماہانہ ملے گا

وزیر اعظم عمران خان نے ملک بھر کیلئے احساس تعلیمی وظائف کا اجرا کردیا اور کہا بچوں،بچیوں کو تعلیم کےزیورسے آراستہ کرنا ریاستی ذمہ داری ہے، بچوں کیلئے تعلیمی وظیفہ ڈیڑھ ہزار اور بچیوں کیلئے 2ہزاردیئے جارہے ہیں۔

احساس پروگرام کے تحت مستحق گھرانوں کیلئے اسکول وظائف کے اجراء کی تقریب کا انعقاد کیا گیا ، وزیر اعظم عمران خان نے اسکول وظائف کے اجراء کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان میں تقریباً 2کروڑ بچے اسکول نہیں جاتے، بدقسمتی سے ہم نے بچوں کی تعلیم پر توجہ نہیں دی، اسکول وظائف کے اجرا سے کوشش کررہےہیں کہ بچوں کو تعلیم دی جائے۔

ملک کا سب سے بڑا سرمایہ اس کے لوگ ہوتے ہیں، اپنے سرمایہ کو تعلیم نہیں دیں گے تو یہ سب سے بڑاظلم ہوتاہے ، بچوں،بچیوں کو تعلیم کےزیورسے آراستہ کرنا ریاستی ذمہ داری ہے، بچوں کیلئےتعلیمی وظیفہ ڈیڑھ ہزار اور بچیوں کیلئے 2ہزاردیئےجارہےہیں، حکومت کی کوشش ہےغریب گھر کے بچوں کو تعلیم فراہم کرے۔

عمران خان نے کہا کہ میں پاکستان کے ہر خطے میں گیا ہوں، پاکستان میں کوئی گھر ایسا نہیں جو بچوں کی تعلیم کے خلاف ہو، والدین کے مسائل بہت ہیں ، اسکولوں میں ٹیچرز کی کمی کا سامنا ہیں ، والدین بچوں کو پڑھانا چاہتے ہیں، اقدامات کرنا حکومت کاکام ہے، ایسے علاقوں میں اسکول بنائیں جو بچے بچیوں کیلئے آسانیاں پیداکریں۔

وزیراعظم نے ڈاکٹرثانیہ نشتر اور احساس پروگرام کی ٹیم کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا انفارمیشن ٹیکنالوجی کے ذریعے فیک آئی ڈیز، گھوسٹ اسکولوں پرقابو پاسکتے ہیں۔

اس سے قبل معاون خصوصی ڈاکٹرثانیہ نشتر کا کہنا تھا کہ ملکی تاریخ میں پہلی بارمستحق طلبا کو تعلیمی وظائف دیئےجارہےہیں، 4 سال میں 22سال تک عمر کے بچے وظیفے کے مستحق ہوں گے۔

ڈاکٹرثانیہ نشتر نے مزید کہا کہ 70فیصد حاضری پر بچوں کیلئے والدین کو وظائف دیئےجائیں گے، پروگرام میں بچیوں کیلئےخصوصی طورپر وظیفے کی قم زیادہ رکھی ہے، ناخواندگی غربت میں اضافہ کے باعث بنتی ہے ، پاکستان تقریباً 2کروڑ بچے اسکول نہیں جارہے۔