kamyab - کامیاب جوان پروگرام کے 2 سال مکمل، وزیراعظم کا نوجوانوں کیلیے بڑا اعلان

وزیراعظم عمران خان نے کامیاب جوان پروگرام کی 2 سالہ کارگردگی رپورٹ پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ حکومت اپنے نوجوانوں کی ہر طرح سے مدد کیلئے تیار ہے۔
کامیاب جوان پروگرام کے 2 سال مکمل ہوگئے، وفاقی حکومت نے 2سالہ کارکردگی رپورٹ جاری کر دی۔
سربراہ کامیاب جوان پروگرام عثمان ڈار نے وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی ، ملاقات میں وزیراعظم کو کامیاب جوان اورنیشنل یوتھ ڈویلپمنٹ پروگرام کی کارکردگی رپورٹ پیش کی۔
جس میں بتایا گیا کہ حکومت1لاکھ سے زائد نوجوانوں کو روزگار، ہنر اور تکنیکی مہارت فراہم کرنے میں کامیاب ہوگئی ، 2 سال میں 35 ارب روپے سے زائد کی رقم نوجوانوں میں تقسیم ہوئی۔
رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ صرف یوتھ انٹرپینور شپ اسکیم کے تحت 30ارب روپے کی رقم تقسیم ہوئی، رقم کی تقسیم ملک بھر کے نوجوانوں میں بلاتفریق میرٹ اورشفافیت کی بنیاد پر ہوئی۔
22 ہزار نئے کاروبارشروع ہوئے،50ہزارافرادنےبراہ راست روزگارحاصل کیا، کامیاب جوان اسکل اسکالرشپ پروگرام میں بھی 5 ارب روپے جاری کئے گئے ، 1لاکھ سے زائد نوجوانوں کوجدید ہنر اور تکنیکی مہارت سکھائی گئی۔
وزیراعظم عمران خان نے کامیاب جوان پروگرام کی کارکردگی رپورٹ پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے بھرپور محنت کرنے پر سربراہ کامیاب جوان پروگرام عثمان ڈار اور ٹیم کو بھی شاباشی دی۔
وزیراعظم نے کہا پروگرام میں شفافیت اورمیرٹ یقینی بنانے پر بے حدخوشی ہے، 2 سالہ محنت کے نتائج سامنے آنا شروع ہو چکے ہیں، حکومت اپنے نوجوانوں کی ہر طرح سے مدد کیلئے تیار ہے۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ منصوبے میں شامل پارٹنر بینکس رقم کی تقسیم کا عمل مزیدتیزکریں، نوجوانوں کوروزگاراورکاروبارکی فراہمی کےمزید مواقع فراہم کریں گے۔
وزیراعظم انٹرپینورشپ میں دلچسپی لینے والےنوجوان حکومتی سرپرستی میں آگے بڑھیں، مشیرخزانہ سےکہا ہے کہ نوجوانوں کیلئے پہلے سے زائد فنڈز مختص کریں۔
سربراہ کامیاب جوان پروگرام عثمان ڈار نے وزیراعظم سے اظہار تشکر کرتے ہوئے کہا سسٹم مضبوط ہو چکا ہے، اب پوری توجہ منصوبے میں مزید تیزی لانےپرہے، پروگرام کا ویژن 2030 ڈیزائن کیا جا رہا ہے، 2023 تک منصوبہ کاروبار اور روزگار کی فراہمی کا سب سے بڑا ذریعہ ہوگا۔
عثمان ڈار کا کہنا تھا کہ ٹیکس پیئرز کے ایک ایک روپے کا درست استعمال یقینی بنانا چاہتے ہیں، کسی صورت میرٹ اور شفافیت پر سمجھوتہ نہیں ہو گا۔