nazrah - ناظرہ قران کی کلاسز کی انسپکشن ،طلبا کو چھٹی کے بعد روک لیاگیا، والدین کا جگہ جگہ احتجاج

گزشتہ روز ہائی کورٹ کے حکم پر ججز نے سکولوں میں ناظرہ قران کی کلاسز چیک کرنا تھیں مگر عدالتی کارروائی کی وجہ سے وہ دو بجے بعد چیکنگ کےلئے سکولوں میں گئے ۔
محکمہ سکول ذرائع کے مطابق ایک روز میں 4 سو سکول چیک کئے گئے ، مگرا س عمل میں طلبا کو خوار ہونا پڑا، سکولوں میں ڈیڑھ بجے اور دو بجے چھٹی ہوجاتی ہے مگر چیکنگ کے نام پر طلبا کو سکولوں میں روک لیاگیا جو بھوکے پیاسے کلاسز میں بیٹھے رہے ، جس پر والدین نے احتجاج شروع کردیا۔
ان کا کہنا تھا کہ بچے صبح سے بھوکے ہیں ان کی حالت خراب ہوجائے گی ، چھٹی دی جائے یہ معاملہ اتنا اچھلا کہ سوشل میڈیا پر چھاگیا، شمس آباد سکول کے باہر احتجاج کا نوٹس لیتے ہوئے سی ای او نے مراسلہ جاری کردیا کہ جوا ساتذہ قران پڑھاتے ہیں وہ صبح 8 بجے سے چا ربجے تک سکول میں موجود رہیں گے، جبکہ طلبہ و طالبات کو شیڈول کے مطابق چھٹی دے دی جائے گی۔
علاوہ ازیں وہ اساتذہ جو قران نہیں پڑھاتے ان کو بھی شیڈول کے مطابق چھٹی دے دی جائے گی، ہیڈ ماسٹر اس بات کے پابند ہوں گے کہ جو سپارے پڑھائے جارہے ہیں ان کا ٹائم ٹیبل ان کے پاس موجود ہواور پڑھانے والے اساتذہ کی کوالیفکیشن کی آخری ڈگری یا سند کی کاپی بھی موجود ہونا چاہیے ، ججز دفعہ 30 کے تحت خو د یا ان کے نمائندہ سکول چیک کریں گے اس لئے تمام ریکارڈ ہیڈ ماسٹر کے ٹیبل پر موجود ہونا چا ہیے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *