unregistered schools - ڈپٹی کمشنر نے غیر قانونی طور پر قائم نجی سکولوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا حکم جاری کردیا

ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے شہر میں غیر قانونی طور پر قائم نجی سکولوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا حکم جاری کردیا اور ضلع بھر میں بغیر نقشہ منظوری اور جعلی رجسٹریشن کے حامل سکولز کے سروے کیلئے ٹیمیں بھی تشکیل دے دی ہیں۔انہوں نے کہا کہ بنا نقشہ منظوری اور بلڈنگ فٹنس سرٹیفکیٹ کے بغیر کسی نجی سکول کو رجسٹرڈ نہیں کیا جائے گا ۔یہ بات انہوں نے گزشتہ روز ڈسٹرکٹ ایجوکیشن رجسٹریشن اتھارٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کی۔اجلاس میں نئے نجی سکولز کی رجسٹریشن اور تعلیمی معیار کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔ڈپٹی کمشنر ملتان علی شہزاد نے کہا کہ شہری علاقوں میں ٹریفک مسائل کا موجب بننے والے سکولز کو پارکنگ پلان دینا ہوگا بصورت دیگر انکو کھولنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔علی شہزاد نے کہاکہ تعلیمی اداروں کی عمارات کی انسپکشن فیل ہونے پر فوری رجسٹریشن کینسل کی جائے ،ان کا مزید کہنا تھا کہ حکومت نے یکساں نصاب تعلیم متعارف کرایا ہے ،شہریوں کی شکایات پر نجی سکولز کی فیسوں اور دیگر معاملات کا بغور جائزہ لے رہے ہیں۔علی شہزاد نے ہدایت کی کہ لاک ڈاؤن کے بعد تعلیمی سسٹم کرونا ایس او پیز کے تحت بحال کیا جائے۔اجلاس میں مختلف نجی سکولز کی رجسٹریشن کیسز کا تفصیلی جائزہ بھی لیا گیا۔