arshad nadeem - ٹوکیو اولمپکس : ارشد ندیم میڈل نہ جیت سکے مگر قوم کے دل جیت لیے

جیولین تھرو فائنل کے آخری راؤنڈ میں ارشد ندیم کی باری ضائع ہوئی، ارشد ندیم نے فائنل مقابلے میں سب سے بڑی تھرو 84.62 میٹر دور پھینکی۔

جیولین تھرو کا گولڈ میڈیل بھارت کے نیرج چوپڑا نے 87.58 میٹر کی تھرو کر کےجیت لیا، جمہوریہ چیک کے جیکب 86.67 میٹر کی تھرو کر کے سلور میڈل لے اڑے، جب کہ جمہوریہ چیک ہی کے ویزلے 85.44 میٹر کی تھرو کر کے برونز میڈل کے حق دار ٹھہرے۔
پاکستان کے ارشد ندیم 84.62 میٹر کی تھرو کے ساتھ پانچویں نمبر پر رہے، انھوں نے اپنی پہلی باری میں نیزہ 82.4 میٹر دور پھینکا تھا، اور پہلے راؤنڈ کی پہلی تھرو میں ارشد ندیم چھٹے نمبر پر رہے تھے۔

بھارتی ایتھلیٹ نیرج چوپڑا نے دوسری باری میں 87.58 میٹر کی تھرو کی، چیک ری پبلک کے ویزلے نے دوسری باری میں 80.30 میٹرکی تھرو کی، جرمنی کے ویبر دوسری باری میں 77.90 میٹر کی تھرو کر سکے، جب کہ دوسری باری میں ارشد ندیم کا پاؤں لکیر پر آ گیا، اور باری ضائع ہوگئی، دوسری باری کے اختتام پر بھی ارشدندیم چھٹے نمبر پر موجود رہے۔

مولڈووا کے مارڈیر نے تیسری باری میں 82.84 میٹرکی تھرو کی، بھارت کے نیرج چوپڑا تیسری باری میں 76.79 میٹر کی تھرو کر سکے، اس راؤنڈ میں سوئیڈن اور رومانیہ جیولین تھرو کے مقابلوں سے باہر ہوگئے، جب کہ چیک ری پبلک کے ویزلے نے تیسری باری میں 85.44 میٹر کی تھرو پھینکی، جرمنی کے ویبر نے 78 میٹر کی تھرو کی، اور ارشد ندیم نے تیسری باری میں 84.62 میٹر کی تھرو کی، اس طرح پاکستانی ایتھلیٹ ارشد ندیم نے شان دار کارکردگی سے جیولین تھرو فائنل کے ٹاپ 8 میں کوالیفائی کر لیا، اور اختتام پر وہ چوتھے نمبر پر براجمان ہوئے۔

دوسرے راؤنڈ کی پہلی باری میں فن لینڈ کے ایتلاتلو 79.20 میٹر کی تھرو کر سکے، جمہوریہ چیک کے ایتھلیٹ نے دوسرے راؤنڈ کی پہلی باری میں 82.86 میٹر کی تھرو کی، پاکستان کے ارشد ندیم نے 82.91 میٹر کی تھرو کی، جرمنی کے ویبر نے 83.10 میٹر کی تھرو کی، جب کہ اس موقع پر نیزہ پھینکنے کے دوران بھارتی ایتھلیٹ نیرج کا پاؤں لکیر سے ٹکرا گیا۔

فائنل مقابلے کی دوسری تھرو، مولڈووا کے کھلاڑی نے 83.30 میٹر کی تھرو کی، جمہوریہ چیک کے کھلاڑی نے 86.67 میٹر کی تھرو کی، ارشد ندیم 81.98 میٹر کی تھرو کر سکے، فائنل مقابلے کی دوسری تھرو میں جرمنی کے ویبر نے 85.15 میٹر کی تھرو کر دی، جمہوریہ چیک کے ویزلے نے 84.98 میٹر کی تھرو کی۔

جیولین تھرو فائنل کے آخری راؤنڈ میں ارشد ندیم کی باری ضائع ہوگئی، اور یوں پاکستانی ایتھلیٹ ٹوکیو اولمپکس کے میڈل کی دوڑ سے باہر ہوگئے۔