sajid sadpara with his father ali sadpara - محمد علی سد پارہ کیمپ 4 میں محفوظ ہوگئے

ساجد سدپارہ اپنے والد کاجسد خاکی کیمپ 4 لانے میں کامیاب ہوگئے۔

ساجد سدپارہ نے غیرملکی کوہ پیماؤں کے ساتھ گزشتہ دنوں اپنے والد اور اُن کے ساتھی آئس لینڈ کے کوہ پیما جان سنوری کی لاشیں تلاش کرنے کے ٹو کی مہم جوئی پر روانہ ہوئے تھے۔دو روز قبل کوہ پیما کے ٹو بیس کیمپ کے قریب سے دو افراد کی لاشیں تلاش کرنے میں کامیاب ہوئے، انہوں نے بتایا کہ پاکستانی ہیرو کا جسد خاکی کیمپ 4میں محفوظ کرلیا ہے، ارجنٹینا کوہ پیما نے بوٹل نک سے جسد خاکی لانے میں مدد کی۔

انہوں نے بتایا کہ میں نے قوم کی طرف سے فاتحہ خوانی اور تلاوت بھی کی، جسد خاکی کی جگہ پاکستان کا جھنڈا بطور نشانی لگا دیا ہے، تا کہ آئندہ اس مقام کو باقاعدہ شناخت مل سکے۔