civil secretariat multan - سول سیکریٹریٹ ملتان کی تعمیر اگست کے پہلے ہفتے سے شروع ہوگی

ایڈیشنل چیف سیکرٹری جنوبی پنجاب کیپٹن ر ثاقب ظفر نے سرکٹ ہاؤس میں اراکین اسمبلی کو بریفنگ دیتے ہوئےکہا کہ جنوبی پنجاب سیکریٹریٹ ملتان کے تعمیراتی کام کا آغاز اگست کے پہلے ہفتے سے ہو گا۔ متی تل پر واقع سول سیکرٹریٹ 404کنال رقبہ پر مشتمل ہو گا، سیکریٹریٹ کی بلڈنگ کی تعمیر پر 2 ارب 40 کروڑ روپے خرچ کیے جائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ رواں بجٹ میں جنوبی پنجاب کے 11 اضلاع کیلئے 189 ارب روپے رکھے گئے ہیں، جن کو ہر صورت اس خطے کے انفراسٹرکچر کی بہتری پر خرچ کیا جائے گا، اجلاس میں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی، چیف وپ عامر ڈوگر اور صوبائی وزیر توانائی ڈاکٹر اختر ملک سمیت ملتان ڈویژن کے اراکین اسمبلی نے شرکت کی۔ایڈیشنل انسپیکٹر جنرل پولیس جنوبی پنجاب کیپٹن ر ظفر اقبال اعوان اور تمام محکموں کے سیکرٹریز بھی موجود تھے۔ کیپٹن ر ثاقب ظفر نے کہا کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے رولز آف بزنس کی منظوری حتمی مراحل میں داخل ہوگئی ہے جس کے بعد تمام اختیارات کے ساتھ سول سیکرٹریٹ اپنے فرائض سر انجام دیگا۔ ایڈیشنل چیف سیکرٹری نے واضح کیا کہ جنوبی پنجاب کیلئے الگ بجٹ بک اور منصوبے مختص کئے گئے ہیں اور کسی منصوبے کا بجٹ واپس لاہور ٹرانسفر نہیں ہو سکے گا۔ سب سیکرٹریٹ کے قیام کے ثمرات عوام تک پہنچانے کیلئے 189 ارب روپے کو رواں مالی سال میں ہی خرچ کرنے کیلئے تمام محکموں کو ٹاسک دیا گیا ہے، 770 زیر تکیمل سکیموں اور 1698 نئی سکیموں پر کام جاری ہے۔ثاقب ظفر نے کہا کہ جنوبی پنجاب کی آبادی کے لحاظ سے نوکریوں کا الگ کوٹہ بھی مختص کر دیا گیا، ہے اس حوالے سے پبلک سروس کمیشن کا الگ زون بھی جنوبی پنجاب کیلئے قائم کیا جائے گا۔اراکین اسمبلی کے سوالات کا جواب دیتے ہوئے ایڈیشنل چیف سیکرٹری جنوبی پنجاب کیپٹن ر ثاقب ظفر نے کہا کہ اب سیکرٹریٹ کے تمام سیکرٹریز کو ترقیاتی منصوبوں کی فوری منظوری کے بعد بجٹ استعمال کرنے کے احکامات دیے گئے ہیں تاکہ عوام کی امانت انکی فلاح و بہبود پر ہی خرچ کی جاسکے۔ بعد ازاں اراکین اسمبلی کو ملٹی میڈیا پر سول سیکرٹریٹ کے حوالے سے تفصیلی بریفننگ بھی دی گئی۔